ملک کا پیسہ لوٹنے والے علاج کیلئے بیرون ملک چلے جاتے ہیں، وزیراعظم

0
47

راولپنڈی(این این آئی)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کا پیسہ لوٹنے والے علاج کیلئے بیرون ملک چلے جاتے ہیں، سارا خاندان علاج کیلئے باہر بیٹھا ہے، ہیلتھ سسٹم میں جو کرنے جا رہے ہیں وہ دنیا میں شاید ہی کہیں اور ہو،ہر خاندان کے پاس 10 لاکھ روپے کا صحت کارڈ ہوگا، صحت کارڈ سے پرائیویٹ ہسپتالوں سے بھی علاج کرایا جاسکتا ہے، ہیلتھ انشورنس پر 450 ارب روپے خرچ کیے جا رہے ہیں، پنجاب حکومت نے جو اقدام کیا اس کیلئے حوصلہ چاہیے،74 سالہ تاریخ میں کسی نے ریاست مدینہ کی طرف جانے کا سوچا بھی نہیں تھا۔بدھ کو یہاں صحت کارڈ کے اجرا کی تقریب سے خطاب میں وزیر اعظم عمران خان نے محکمہ صحت کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومت نے یہ ایک بڑا اقدام اٹھایا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے برطانیہ کا صحت کا نظام بہت قریب سے دیکھا ہوا ہے اور اس نے مجھے متاثرکیا جس کے تحت کوئی بھی شہری سرکاری ہسپتال میں جاکر اپنا علاج کروا سکتا ہے تاہم یہ پروگرام برطانیہ کے ہیلتھ پروگرام سے بھی آگے اس میں کوئی بھی شخص نجی ہسپتال میں بھی علاج کروا سکتا ہے۔انہوںنے کہاکہ شاید ہی دنیا میں کوئی ایسا ملک ہوگا جہاں ایسا کوئی پروگرام شروع کیا گیا ہو، یہ ایسا پروگرام ہے جو امیر غریب سب کیلئے ہے، ہم نے سرکاری ہسپتالوں کی تنزلی دیکھی ہے، میں اور میرے بہن بھائی میو ہسپتال میں پیدا ہوئے تھے، اس وقت اس ہسپتال کا معیار تھا۔وزیر اعظم نے کہا کہ ہم نے آہستہ آہستہ سرکاری ہسپتالوں کی تنزلی دیکھی اور پھر امیروں کیلئے نجی ہسپتال ہوتے تھے اور بچارہ عام شہری سرکاری ہسپتالوں میں جاتا تھا، ضلعی ہسپتالوں میں ڈاکٹرز جاتے ہی نہیں تھے لوگوں کو علاج کروانے کے لیے میانوالی سے راولپنڈی آنا پڑتا تھا۔انہوں نے کہا کہ غریب بچارہ ٹھوکریں کھا رہا تھا، ایسا نظام بن گیا تھا کہ اگر اچھا علاج چاہیے تو پیسے لاؤ۔