جعلی میڈیا ، این جی اوز کے ذریعے عالمی رائے عامہ کو گمراہ کرنے کیلئے بھارت پر مقدمہ چلایا جانا چاہیے، شہر یار آفریدی

0
193

اسلام آباد (این این آئی) پارلیمنٹ کی کمیٹی برائے کشمیر برائے شہریار خان آفریدی نے کہا ہے کہ بھارت کو عالمی رائے عامہ کو گمراہ کرنے کی کوشش کی جانی چاہئے کیونکہ یورپی یونین کے ڈس انفو لیب نے عالمی رائے عامہ کو گمراہ کرنے کے لئے بھارت کے ذریعہ جعلی میڈیا آؤٹ لیٹس اور این جی اوز کے نیٹ ورک کو بے نقاب کردیا تھا، یوم یکجہتی کشمیر کے حقوق کے سلسلے میں یہاں منعقدہ سیمینار کے سامعین سے خطاب کرتے ہوئے شہریار آفریدی نے کہا کہ بھارت اب جموں و کشمیر پر اپنا غیر قانونی قبضہ نہیں رکھ سکتا۔ شہریار خان آفریدی نے کہا کہ کشمیری عوام اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنی تقدیر کا آزادانہ فیصلہ کرنے کے لئے غیر جانبدارانہ اور آزادانہ رائے شماری کے انعقاد کے عہد کو پورا کریں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بھارتی توسیع پسندی کے ایجنڈے کو بے نقاب کرتا رہے گا اور بھارت جموں و کشمیر میں اپنے توسیع پسندانہ ڈیزائنوں پر دنیا کو مزید گمراہ نہیں کرسکتا۔ انہوں نے کہا کہ سیفران کے وزیر کی حیثیت سے انہوں نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کو پاکستان آنے کی دعوت دی تھی اور انہوں نے تنازعہ کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ کی قراردادوں کے ساتھ کھڑے ہونے کا وعدہ کیا تھا۔ آفریدی نے کہا کہ کشمیر کمیٹی تنازعہ کشمیر سے متعلق اپنی پالیسی تیار کرنے کے لئے کشمیر کے تمام اسٹیک ہولڈرز تک پہنچ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کمیٹی میں تمام سیاسی جماعتوں کی نمائندگی ہے اور کمیٹی مسئلہ کشمیر کو ایک ہی آواز سے اٹھانے میں مدد کے لئے کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قبائلی پشتونوں نے 1948 میں جموں و کشمیر کو آزاد کرانے میں مدد کے لئے کشمیری آزادی پسندوں کے ساتھ ہاتھ ملایا تھا اور آج بھی ، پاکستانی عوام موٹی اور پتلی سے کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت سیکڑوں جعلی این جی اوز ، جعلی میڈیا تنظیموں اور جعلی ویب سائٹوں سے کشمیر کے بارے میں عالمی رائے کو گمراہ کرنے کے لئے استعمال کررہا ہے اور یوروپی یونین کے ڈسنو لیب نے بھارتی شیطانی ڈیزائن کو پوری طرح سے بے نقاب کردیا۔ انہوں نے کہاکہ آج کل بھی ہندوستانی اقلیت یہ کہہ رہی ہیں کہ جناح نے ہندوستان کے مسلمانوں کے لئے آزاد ریاست کا حصول حاصل کرکے ایک درست فیصلہ لیا تھا۔ مودی حکومت اپنے توسیع پسندانہ ایجنڈے کی وجہ سے پوری طرح سے بے نقاب ہوگئی ہے۔شہر یار آفریدی نے کہا کہ کوئی بھی پاکستان کے دو بڑے سکیورٹی امور یعنی ہمارا جوہری پروگرام اور ہماری کشمیر پالیسی پر سمجھوتہ کرنے کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتا۔انہوں نے کہاکہ انہوں نے کہا کہ جعلی ہندوستانی سوشل میڈیا سائٹوں کے ذریعہ جعلی پروپیگنڈے کا مقابلہ کرنے میں مدد کیلئے پاکستان کے نوجوانوں کو بلاگرز ، وائگلرز اور سوشل میڈیا کارکن بننے کی ضرورت ہے۔