آئین کے 62 ایف آرٹیکل میں ترامیم کی ضرورت ہے، جھوٹا بندا اہل نہیں ہوسکتا ،بابر اعوان

0
94

اسلام آباد (این این آئی) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما سابق وزیر بابر اعوان نے کہاہے کہ آئین کے 62 ایف آرٹیکل میں ترامیم کی ضرورت ہے، جھوٹا بندا اہل نہیں ہوسکتا ،ہم لوگ دو تہائی اکٹریت سے واپس آ رہے ہیں، اگر کوئی تبدیلی لا سکتا ہے تو عمران خان ہے۔ عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ امپورٹڈ حکومت نے کیسز کا لنڈا بازار لگا دیا، عمران خان نے ایک بار بھی نہیں کہا کہ میں بیمار ہوں۔ انہوںنے کہاکہ شیر کا بچہ ہر بار پیش ہوا ہے، یہ سارے کیسز جھوٹے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ یہ حکومت والے ہی جھوٹے ہیں، مریم نواز نے اب یہ موقف لیا ہے کہ یہ گھر ہی میرا نہیں ہے۔انہوںنے کہاکہ یہ امپورٹڈ حکومت صرف اٹک کا پل ہی کراس کر کے دیکھا دے، یہ صرف سیکیورٹی حصار میں بیٹھ کر برقیں مارتے ہیں، یہ وہ لاٹ ہے جس کو تلاش کیا گیا کہ وہ بائیس کروڑ لوگوں کو لیڈ کرے۔ انہوںنے کہاکہ ابا کہتا ہے گھر میرا نہیں ہے، بیٹا کہتا ہے میں پاکستانی نہیں ہوں۔ انہوںنے کہاکہ تین ضروری باتیں چل رہیں ہیں، آئین کے 62 ایف آرٹیکل میں ترامیم کی ضرورت ہے،جھوٹا بندا اہل نہیں ہو سکتا۔ انہوںنے کہاکہ 62ون ایف میں لکھا ہوا ہے کہ وہ صادق اور امین ہو گا،اگر تبدیلی لانی ہے تو دو تہائی اکثریت سے سینٹ اور نیشنل اسمبلی میں لائی جائے ۔ بابر اعوان نے کہاکہ اگر کوئی تبدیلی لا سکتا ہے تو وہ عمران خان ہے، ہم لوگ دو تہائی اکٹریت سے واپس آ رہے ہیں۔ بابر اعوان نے کہاکہ کوین آف ٹلنگ لائز اب لندن میں ہے ، ان کا یہ کہنا تھا کہ سائفر ہے ہی نہیں۔ بابر اعوان نے کہاکہ سب اداروں نے کہا کہ سائفر ہے ،پاکستان کے خلاف جو بات کرے گا وہ ہمیں قبول نہیں ،اب وہ مان گئے کہ سائفر ہے۔ بابر اعوان نے کہاکہ میں کہتا ہوں کہ سائفر مداخلت ہے، سازش ہے، سازش ہے، آج بھی وہ سائفر پڑھے بغیر کوئی بھی یہ کہتا ہے کہ سازش نہیں ہوئی تو وہ آنکھ پر ہاتھ رکھ کر کہہ رہا ہے کہ سورج نہیں ہے۔انہوںنے کہاکہ ہم عنقریب اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کریں گے، کب کریں گے، یہ عمران خان بتائیگا۔ بابر اعوان نے کہاکہ ڈالر کے ریٹ نیچے آنے سے بجلی کے بل، کرایوں یا کسی بھی چیز میں فرق پڑا ؟ قوم عمران خان کے ساتھ کھڑی ہوئی