یوکرین کا نیٹو سے الحاق جنگ کی روشنی میں ایک ”مناسب نتیجہ”ہوگا، ہنری کسنجر

0
67

واشنگٹن(این این آئی )سابق امریکی وزیر خارجہ ہنری کسنجر نے کہا ہے کہ یوکرین میں روسی فوجی کارروائی نے ظاہر کیا کہ موخر الذکر کے لیے نیٹو سے باہر رہنے کا کوئی جواز نہیں رہا، حالانکہ وہ پہلے اس قدم کے مخالف تھے جس کا کیف طویل عرصے سے مطالبہ کر رہا تھا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سابق امریکی وزیر خارجہ نے ڈیووس میں ورلڈ اکنامک فورم میں ویڈیو کانفرنس کے ذریعے اپنی شرکت کے دوران کہا کہ یوکرین کا نیٹو سے الحاق ایک “مناسب نتیجہ” ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اس جنگ سے پہلے میں نیٹو میں یوکرین کی رکنیت کے خلاف تھا کیونکہ مجھے ڈر تھا کہ اس سے بالکل وہی عمل ہو جائے گا جس کا ہم اب مشاہدہ کر رہے ہیں۔”انہوں نے مزید کہا کہ اب جبکہ یہ عمل اس سطح پر پہنچ چکا ہے۔ ان حالات میں غیر جانبدار یوکرین کا تصور اب ممکن نہیں رہا۔ کسنجر نے کہا کہ “جنگ کو خود روس کے خلاف جنگ بننے سے روکنا” اور “روس کو بین الاقوامی نظام میں دوبارہ شامل ہونے کا موقع فراہم کرنا” اہم ہے۔جب کہ کسنجر نے تسلیم کیا کہ جو ممالک ایک بار ماسکو کے زیر کنٹرول تھے وہ ایسی تجویز پیش کرنے سے گریزاں ہوں گے، انہوں نے اس بڑی، جوہری ریاست میں عدم استحکام سے بچنے کی اہمیت پر زور دیا۔