وزیرداخلہ محسن نقوی کافرینٹر کانسٹیبلری کے شب قدر قلعہ کا دورہ ،قیام امن کیلئے ایف سی کی خدمات کو خراج تحسین

0
0

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی نے کہا ہے کہ ایف سی کے افسروں اور جوانوں نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں بہادری کی داستانیں رقم کی ہیں ،فرنٹیئر کانسٹیبلری کی پشاور سمیت خیبر پختونخوا میں قیام امن کیلئے گراں قدر خدمات ہیں۔ وزارت داخلہ کی جانب سے ہفتہ کو جاری بیان کے مطابق وفاقی وزیرداخلہ نے ان خیالات کا اظہار فرینٹر کانسٹیبلری کے شب قدر قلعہ کے دورہ کے موقع پر کیا۔ وزیرداخلہ نے کہا کہ قوم کو ایف سی کے جری سپوتوں پر ناز ہے۔ کمانڈنٹ ایف سی معظم جاہ انصاری نے وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی کو قلعہ کے تاریخی پس منظر کے بارے بریفنگ دی۔ وزیرداخلہ نے تاریخی قلعہ کی دیکھ بھال پر کمانڈنٹ ایف سی اور ان کی ٹیم کی کارکردگی کو سراہا اور کہا کہ قلعہ ایک تاریخ سموئے ہوئے ہے۔ وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی نے وزیٹرز بک میں تاثرات بھی درج کئے ۔ وفاقی وزیرداخلہ نے 1813 کے بنے ہوئے تاریخی قلعہ کا دورہ کیا اور قلعہ کے مختلف قدیم حصے دیکھے، وفاقی وزیرداخلہ نے زنجیروں میں جکڑے قلعہ کے اصلی اورقدیمی دروازوں میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔ انہوں نے برطانیہ کے سابق وزیر اعظم سر ونسٹن چرچل کا مجسمہ اور 1837 میں تعمیر ہونے والا دیار کی لکڑی کا ریسٹ ہاوس بھی دیکھا۔ ریسٹ ہائوس میں سر ونسٹن چرچل نے ستمبر 1897 میں قیام کیا تھا، رنجیت سنگھ کے دور میں ماہر تعمیرات طوطا رام نے قلعہ تعمیر کرایا اور اس کا نام شنکر گڑھ رکھا گیا،1839 میں مہمند قوم نے شنکر گڑھ قلعہ پر حملہ کیا اور دروازے توڑ کر قلعہ میں داخل ہوئے، رنجیت سنگھ کے بیٹے شیر سنگھ نے قلعہ کے دروازے ٹوٹنے کی انکوائری فرنچ جنرل سے کرائی، انکوائری کی روشنی میں 1840 میں دروازوں کو 100 برس تک زنجیروں میں جکڑنے کا حکم دیا، 184 برس بعد بھی دروازے زنجیروں میں جکڑے ہوئے ہیں۔