نیک کام میں دیر کیسی، استعفے دیں، شہباز گِل

0
162

پشاور(این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل نے معاون خصوصی خیبر پختون خوا کامران بنگش کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایک بچے کو ساتھ لگایا ہوا ہے کہ استعفے دے دو ورنہ میں نے استعفیٰ دے دینا ہے۔شہباز گِل نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے ان چوروں کا پریشر نہیں لیا، پی ڈی ایم والے این آراو نہ ملنے پرمایوسی کا شکار ہیں، وزیراعظم نے کہا تھا کہ وہ جب ان پر ہاتھ ڈالیں گے تو یہ سب اکٹھے ہو جائیں گے، احتساب پر عمران خان نہ این آر او دیں گے نہ اس پر بات کریں گے۔شہبازگل نے کہا ہے کہ ان کو کیا پتا خیبرپختونخوا نے تحریک انصاف کو دوسری باری کیوں دی، پشارو نے جلسے میں پیغام دے دیا تھا ان کو سمجھ نہیں آئی پھر لاہور میں جلسہ کیا، خیبرپختونخوا کا کلچر ہے کہ وہ دوسرے کو عزت دیتا ہے اور عزت لیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ان کو پیغام مل چکا کہ عوام لوٹ مار کے ساتھ نہیں، جب شوگر کمیشن کی رپورٹ آئی تو انہوں نے کہا کہ ہم عمران خان کو سبق سکھائیں گے، مولانا فضل الرحمن نے جلسے میں نا زیبا زبان استعمال کی جس کی مذمت کرتے ہیں، مولانا فضل الرحمن کو اپنے بیان پر معذرت کرنی چاہیے۔شہبازگل نے کہاکہ پاکستان میں چند ایسے حکمران بیٹھے تھے جنہوں نے صرف ایک کام کیا قوم کو لوٹا، پاکستانیوں کا تعلق کسی جماعت زبان سے ہو سب ہمارے لیے قابل احترام ہیں۔محمود اچکزئی سے متعلق انہوں نے کہاکہ کہ محمود اچکزئی کے لاہور اور کراچی کے بیان کی مذمت کرتا ہوں، کسی کو ٹیلی فون کرنے پر غصہ آگیا ہے اور کوئی گالی دے کر بھی خود کو عالم کہہ رہے ہیں۔شہبازگل نے کہا کہ جس طرح چینی کی قیمت نیچے آئی ہے اب مافیا کی قیمت بھی نیچے آئے گی ، کورونا وبا میں پوری دنیا میں مارکیٹ بند ہوئی پاکستان میں کھلی ہوئی ہے ، اب کورونا کی دوسری لہر میں اپوزیشن کہتی ہے لاک ڈاون نہیں کرنا۔انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کی کورونا وائرس پالیسیز سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے کوروناوائرس سے متعلق جرات اور عقلمندانہ فیصلے کیے، آج سیمنٹ کی انڈسٹری، تعمیراتی صنعت بڑھ رہی ہے، یہ مذاق اڑاتے ہیں کہ ایک کروڑ نوکریاں کیسے دیں گے ہم ایک کروڑ سے زیادہ نوکریاں دیں گے۔شہبازگل نے کہا کہ مراد سعید دن رات محنت کررہا ہے کہ پورے پاکستان میں سڑکوں کا نیٹ ورک لائے، دوسری طرف بات ہورہی ہے کہ ہم جلسہ کریں گے اور اداروں کو گالیاں دیں گے، دوسری طرف بات ہو رہی ہے کہ حکومت گرا کر اقتدار ان کو دیا جائے۔ شہباز گل نے کہاکہ لاہور کے لوگوں نے کوروناوائرس کے ایس او پیز پر عمل کیا پہلے تو جلسے میں آئے نہیں، لاہور کے لوگ جو جلسے میں آئے انہوں نے ایک دوسرے سے 6 فٹ کا فاصلہ رکھا، اب جلسے کی تصاویر میں جعلی سازی کی گئی جس میں مریم نواز کی انگلیاں لمبی ہوگئیں۔شہبازگل نے سانحہ اے پی ایس سے متعلق کہا کہ اے پی ایس کے سانحے کو کبھی فراموش نہیں کیا جاسکتا، اے پی ایس کے واقعے سے ہماری تاریخ بدلی اور پاکستان نے ایک تاریخ رقم کی، اے پی ایس واقعے کے بعد قوم نے متحد ہوکر دہشتگردی کے خلاف جنگ کی۔