کراچی ، کوئٹہ ، چمن شاہراہ کو قاتل شاہراہ کہا جاتا ہے ، تین دہائیوں پر سڑک پر کوئی توجہ نہیں دی جاتی ،مراد سعید

0
93

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیر مواصلا ت مراد سعید نے کہاہے کہ کراچی ، کوئٹہ ، چمن شاہراہ کو قاتل شاہراہ کہا جاتا ہے ، تین دہائیوں پر سڑک پر کوئی توجہ نہیں دی جاتی ،شاہراہ کا ٹینڈر ہوچکا کنٹریکٹ ایوارڈ ہوچکا، وزیر اعظم عمران خان آئندہ ماہ باضابطہ افتتاح کرینگے۔کراچی کوئٹہ، چمن ہائی میں ٹریفک حادثات میں اضافے سے متعلق توجہ دلاو نوٹس سینیٹ میں سینیٹر دنیش کمار نے کیا اور کہاکہ بلوچستان کی یہ شاہراہ دہشتگرد شاہراہ ہے۔ انہوںنے کہاکہ میں بھی اسی شاہراہ کا متاثرہ ہوں 54 ٹانکے میرے سر پر لگے، اس خونی شاہراہ پرکئی لوگ لقمہ اجل بنے، کئی گھر اجڑے۔ انہوںنے کہاکہ سب حکومتوں نے اس شاہراہ کی تعمیر کے وعدے کیے مگر کوئی کام نہیں ہوا،بجٹ میں رقوم صرف فزیبلٹی کیلئے رکھی جاتی ہے۔ سینیٹر دینش کمار نے کہاکہ اس شاہراہ کو ڈبل کیا جائے۔ وزیر مواصلات مراد سعید نے توجہ دلائو نوٹس پر جواب دیتے ہوئے کہاکہ کراچی کوئٹہ چمن کی اس شاہراہ کو قاتل سڑک کہا جاتاہے، تین دہائیوں سے اس سڑک پر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ 796 کلو میٹر کی شاہراہ ہے اگلے مہینے اس کا افتتاح ہے،330 کلو میٹر کے سیکشن پر کام شروع کرنے جا رہے۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ شاہراہ کا ٹینڈر ہوچکا کنٹریکٹ ایوارڈ ہوچکا، وزیر اعظم عمران خان آئندہ ماہ اس کا باضابطہ افتتاح کرینگے۔ مراد سعید نے کہاکہ گزشتہ حکومت 2ہزار کلو میٹر شاہراہوں کی منصوبہ بندی کی تھی،موجودہ حکومت نے بلوچستان میں 3ہزار کلومیٹر جبکہ پورے ملک میں8ہزار کی منصوبہ بندی کی ہے۔