نو مسلم آرزو فاطمہ نے ایک مرتبہ پھر والدین کے ساتھ جانے سے انکار کردیا

0
339

کراچی(این این آئی)تیرہ سالہ نو مسلم آرزو فاطمہ نے ایک مرتبہ پھر والدین کے ساتھ جانے سے انکار کردیا۔پیرکوکراچی سندھ ہائی کورٹ میں آرزو کیس کی سماعت ہوئی۔عدالت نے آرزو سے پھر استفسار کرتے ہوئے کہا کہ آپ والدین کے ساتھ جانا چاہتی ہیں؟ آرزو فاطمہ نے ایک دفعہ پھر والدین کے ساتھ جانے سے انکار کردیا۔عدالت نے آرزو فاطمہ کو دارالامان منتقل کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ محکمہ داخلہ آرزو کی کونسلنگ کا اہتمام کرے۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے روزانہ کوئی نمائندہ ایک گھنٹہ آرزو سے ملاقات کرے ، پولیس شفاف تفتیش کر کے ماتحت عدالت میں رپورٹ پیش کرے۔ عدالت کی جانب سے آرزو فاطمہ کی تعلیم اور دیگر سہولیات کا انتظام کرنے بھی ہدایت کی گئی۔ عدالت نے کہاکہ آرزو چاہئے تو اپنے فیصلہ واپس لے سکتی ہے بعدازاں عدالت نے آرزو فاطمہ سے متعلق درخواست نمٹا دی۔سماعت کے موقع پر سرکاری وکیل نے بتایا کہ کیس میں 3ملزمان ضمانت پر رہا ہیں۔ تفتیشی افسر نے کہا کہ کیس کی تفتیشی جاری ہے چالان جمع کرانے کیلئے مہلت دی جائے