پٹواری نئے پاکستان میں بھی پرانا کام ہی کر رہے ہیں’لاہور ہائیکورٹ

0
504

لاہور( این این آئی )لاہور ہائیکورٹ نے لیگی رہنمائوں اور کارکنوںکی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر سماعت کے بعد فیصلہ محفوط کر لیا جبکہ فاضل عدالت نے درخواست گزاروں کے وکیل کے دلائل پر ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پٹواری بھی تو آپ کے ہی تیار کیے گئے ہیں، پٹواری نئے پاکستان میں بھی پرانا کام ہی کر رہے ہیں۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس چوہدری مشتاق نے درخواست پر سماعت کی ۔سیکرٹری داخلہ اور آئی جی پنجاب نے لاہور ہائیکورٹ میں لیگی رہنمائوں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر جواب جمع کرا دیا۔ہوم سیکرٹری او ر آئی جی پنجاب کی جانب سے جواب جمع کرایا گیا ۔ایڈوکیٹ جنرل پنجاب نے عدالت میں موقف پیش کیا کہ بلاجواز کسی لیگی کارکن ہے خلاف مقدمہ درج نہیں ہوا، ریاست کی ذمہ داری ہے کہ شہریوں کی زندگی کو تحفظ فراہم کرے، جہاں کرونا ایس او پی کی خلاف ورزی ہو گی وہاں مقدمات درج کیے گئے ہیں۔مسلم لیگ (ن) کے وکیل نے عدالت میں موقف پیش کیا کہ ایڈوکیٹ جنرل پنجاب درج کیے گئے مقدمات کی تفصیل کے بغیر ہی آ گئے ہیں، رہنمائوں کی گرفتاریاں پی ڈی ایم جلسے کو روکنے کے لیے کی جا رہی ہیں ، غیر قانونی طور پر لیگی رہنمائوں اور کارکنوں پر اکیس مقدمات درج ہو چکے ہیں اور یہ مقدمات پٹواریوں کی مدعیت میں درج ہو رہے ہیں۔جسٹس چوہدری مشتاق نے ریمارکس دیئے کہ پٹواری بھی تو آپ کے ہی تیار کیے گئے ہیں، پٹواری نئے پاکستان میں بھی پرانا کام ہی کر رہے ہیں۔ فاضل جسٹس کے ریمارکس پر عدالت میں قہقہ بلند ہوا۔ لاہور ہائیکورٹ نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔