پی ڈی پی کارکنوں، پولنگ ایجنٹوں کو حراست میں لیا گیا، میر ی فون سروس معطل کی گئی، محبوبہ مفتی

0
83

سرینگر(این این آئی) بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموںوکشمیر میں پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی صدر محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ ان کی پارٹی کے پولنگ ایجنٹوں اور کارکنوں کو تھانوں میں رپورٹ کرنے کو کہا جا رہا ہے ۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق محبوبہ مفتی نے سماجی رابطوں کی سائٹ ‘ایکس’ پر لکھا ہے کہ ”پی ڈی پی کے پولنگ ایجنٹوں اور کارکنوں کو مقامی تھانوں میں رپورٹ کرنے کو کہا جا رہا ہے ۔” انہوںنے سوال کیا کہ لوگوں کو جمہوریت پر یقین ظاہر کرنے کی سزا کیوں دی جا رہی ہے۔محبوبہ مفتی نے جمعہ کے روز بھارتی الیکشن کمیشن کے نام یک خط بھی لکھا جس میں انہوں نے کہا کہ پی ڈی پی کارکنوں اور پولنگ ایجنٹوں کو پولیس نے حراست میں لیا ہے، جب گرفتار افراد کے اہل خانہ تھانوں میں گئے تو انہیں بتایا گیا کہ یہ گرفتاریاں ایس ایس پی ضلع اسلام آباد اور ڈی آئی جی جنوبی کشمیر کے احکامات پر کی گئی ہیں۔دریں اثنا محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ ان کی موبائل فون سروس اچانک معطل کر دی گئی ہے ۔ انہوںنے ایکس پر لکھا ”میں صبح سے کوئی کال نہیں کر پا رہی ہوں۔ عین پولنگ والے روز فون سروس کی اچانک معطلی کی تاحال کوئی وضاحت پیش نہیں کی گئی۔ بھارتی حکومت نے ڈھونگ پارلیمانی انتخابات کے ایک اور مرحلے پر مقبوضہ جموںوکشمیر کے اسلام آباد، کولگام، شوپیاں، راجوری اور پونچھ اضلاع میں سیکورٹی کے نام پرپابندیاں انتہائی سخت کر دی ہیں۔ن اضلاع پر مشتمل اسلام آباد۔راجوری پارلیمانی حلقے میں آج ڈھونگ بھارتی پارلیمانی انتخابات کے چھٹے مرحلے میں پولنگ ہو رہی ہے۔ مودی حکومت نے اس حلقے میں انتخابات کوایک فوجی آپریشن میں تبدیل کر دیا ہے۔ یہ حلقہ ایک جنگی علاقے کامنظر پیش کررہا ہے۔ بھارتی فورسز کے اہلکار ان اضلاع کے مختلف علاقوں میں تلاشی کی کارروائیاں ،گشت اورسڑکوں پر مارچ کر رہے ہیں۔