ہر نائی ، چیک پوسٹ پر مسلح دہشتگردوں کے حملے میں سات اہلکار شہید ، چھ زخمی

0
705

راولپنڈی /ہرنائی (این این آئی)بلوچستان کے ضلع ہرنائی میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی چیک پوسٹ پر مسلح دہشت گردوں کے حملے کے دوران 7 اہلکار شہید اور6 زخمی ہو گئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بلوچستان کے علاقے ہرنائی میں ایف سی چیک پوسٹ پر گزشتہ رات حملہ کیا گیا جس کے بعد دہشت گردوں سے فائرنگ کے تبادلے میں ایف سی کے 7 جوان شہید ہوگئے۔آئی ایس پی آر کے مطابق شہید جوانوں کی نام میانوالی سے تعلق رکھنے والے نائب صوبیدار گلزار، حافظ آباد کے سپاہی فیصل، پشین سے تعلق رکھنے والے سپاہی عبدالوکیل، کوہاٹ سے سپاہی شیر زمان، ڈیرا بگٹی سے سپاہی جمال، ڈیرا غازی خان سے عبدالرؤف اورمظفر گڑھ سے تعلق رکھنے والے فقیر محمد ہیں۔۔ترجمان پاک فوج کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے دہشت گردوں کو پکڑنے کیلئے علاقے کا محاصرہ کرلیا ہے اور آپریشن کے دوران بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولیاں تحویل میں لے لی گئی ہیں ،دہشت گردوں کو فرار سے روکنے کے لیے سرچ آپریشن جاری ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گرد ریاست مخالف قوتوں کی پشت پناہی سے امن کو سبوتاژکرنے کیلئے یہ بزدلانہ کارروائیاں کررہے ہیں تاہم دہشت گردوں کو بلوچستان میں سخت کوششوں کے بعد حاصل کئے گئے امن کو سبوتاژنہیں کرنے دیں گے اور سکیورٹی فورسز دشمن کی ہر سازش کو ناکام بنادیں گی۔دوسری جانب وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے ایف سی چیک پوسٹ پر دہشتگردوں کے حملے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں ہوسکتے۔انہوں نے کہا کہ بہادر سیکیورٹی فورسز وطن کا دفاع اور دہشت گردوں کا مقابلہ کرنا جانتی ہیں، شہیدوں کا خون رائیگاں نہیں جائے گا، سیکیورٹی فورسز ملک کے دفاع میں قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہی ہیں، ہم سب کو ان پر فخر ہے، ہم شہید ہونے والے اہلکار کے خاندان کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔وزیرِ اعلی بلوچستان نے حملے میں زخمی سیکیورٹی اہلکاروں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا بھی کی ہے۔